Logo
Print this page

امام خمینی ٹرسٹ میانوالی کی جانب سے پہلی بار استور میں اجتماعی شادیوں کا انعقاد

استور ( اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 02 جون۔2015ء ) امام خمینی ٹرسٹ میانوالی کی جانب سے پہلی بار استور میں اجتماعی شادیوں کا انعقاد کیا گیا۔ جس میں ضلع استور کے مختلف پسماندہ گاوں سے تعلق رکھنے والے غریب اور نادار 20جوڑوں کی اجتماعی شادی کا اہتمام استور عیدگاہ مرکزی امام بارگاہ میں منعقد کیا گیا ۔جس کے مہمان خصوصی نگران وزیر تعمیرات گلگت بلتستان ناصر زمانی تھے جبکہ صدر محفل انتصار حسین نقوی تھے۔
اجتماعی شادی کی تقریب میں دلہا دلہن کے رشتہ داروں کے علاوہ سید عاشق حسین الحسینی،شیخ حفاظت علی،علامہ قنبر علی محمدی ،ڈپٹی کمشنر استور رائے منظور حسین ناصر ایس ایس پی استور علی شیر جاکھرانی سمیت سیاسی وسماجی اور مذہبی رہنماوں کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی۔اجتماعی شادیوں کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر تعمیرات ناصر زمانی کہا کہ گلگت بلتستان سمیت پاکستان میں ایسے فلاحی ادارے بہت کم ہیں جو غریب لوگوں میں خوشیاں بانٹتے ہیں اور ان کے دکھ درد کا ساتھی بنتے ہیں۔
انہوں نے امام خمینی ٹرسٹ میانوالی کی ان کاوشوں کو سہراہا جو انہوں نے غریب اور بے سہارا لوگوں کو شادی کر کے ایک خوشحال زندگی گزارنے کا موقعہ فراہم کیا۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سید انتصار حسین نقوی نے کہا کہ اﷲ تعالیٰ نے ہمیں موقعہ دیا جو ہم گلگت بلتستان کے سب سے پسماندہ ضلع استور میں ایک نیک کام کیا ۔جو لوگ غربت اور مفلسی کی وجہ سے اپنی شادی نہیں کر سکتے تھے ہم نے ان جوڑوں کی شادی کر کے اپنا اہم انسانی فریضہ انجام دیا ہے۔
تقریب سے سید عاشق حسین الحسینی ،شیخ حفاظت علی،ڈاکٹر عباس ،علامہ منظور احمد قادری،ولایت بلتی نے بھی خطاب کیا ۔اس موقعے پر ڈپٹی کمشنر استور رائے منظور حسین نے شادی کی تقریب کے دوارن ہی خدمت خلق کے جذبے سے استور میں ایک نئی ٹرسٹ کی بنیاد رکھنے کا بھی اعلان کیا جو بلا رنگ و نسل استور میں فلاحی کاموں میں حصہ لے گی اس ٹرسٹ کے لئے انہوں نے ایک لاکھ روپے کا اعلان کیا جس کے بعد وزیر تعمیرات ناصر زمانیہ نے ٹرسٹ کے دفتر کے تمام اخراجات دینے کا اعلان کیا ۔ ڈاکٹر عباس نے ٹرسٹ کے لئے 50ہزار روپے کا اعلان کیا۔تقریب کے آخر میں ٹرسٹ کی جانب سے تمام جوڑوں کو جہز کے طور پر ایک ایک لاکھ روپے سے زائد کا سامان بھی دیا گیا

© 2017 امام خمینی ٹرسٹ