الخدیجہ ڈگری کالج برائے خواتین، ماڑی انڈس ، ضلع میانوالی

الخدیجہ ڈگری کالج برائے خواتین الخدیجہ ڈگری کالج برائے خواتین

خواتین کے ڈگری کالجز یا میانوالی شہر میں ہیں یا عیسیٰ خیل تحصیل ہیڈ کوارٹر پر جو اِن یونین کونسلز سے 50سے زائد کلو میٹرز کے فاصلے پر ہیں طالبات میٹرک کرنے کے بعد گھر سے آنے جانے کی صورت میں کالج کی تعلیم جاری نہیں رکھ سکتیں صرف امیر والدین ہی جو بچیوں کے ہاسٹل میں تعلیمی اخراجات برداشت کر سکتے ہیں وہی اپنی بچیون کو تعلیم دلواتے ہیں ان یونین کونسلز کے عوام کے شدید اصرار پرانڈس گرلز ہائی سکول ، ماڑی انڈس کی انتظامیہ نے فیصلہ کیا کہ جیسے بھی ممکن ہو گرلز کالج کی ابتداءکی جائے چنانچہ امام خمینی ٹرسٹ کے ماتحت گرلز ہائی سکول کے پرنسپل اور انڈس ویلفئر سوسائٹی نے ایک عمارت 10ہزار روپے ماہوار کرایے پر حاصل کی ۔ پانی و بجلی کا انتظام کیا ، فرنیچر ، لائبریری بکس و دیگر ضروری سامان کے اخراجات برداشت کیے اور 2008ءمیں F.Aفرسٹ ائیر کلاس کا اجراءکر دیا ۔کرایہ کی عمارت کسی صورت میں کالج کی ضروریات کو پورا نہیں کرتی تھی۔ رجسٹریشن اور یونیورسٹی سے الحاق کیلئے معقول عمارت کی ضرورت تھی۔

    آرٹس کی کلاسز کا اجراءکر دیا گیا گذشتہ تین سال کی مختصراً کارکردگی یہ ہے کہ شروع سے ہی میانوالی کے کالجز کے مقابلے میں بہتر رزلٹس حاصل کیے ۔F.Aکے پہلے رزلٹ میں 32طالبات تھیں ، 29پاس ہوئیں ،3کمپارٹمنٹ میں تھیں اور فرسٹ آنے والی بچی نے آرٹس میں 823نمبر لے کر ضلع میں پہلی پوزیشن حاصل کی ۔ واضح رہے کہ کسی بھی ڈسٹرکٹ میانوالی کے کالج نے اتنا اچھا رزلٹ حاصل نہیں کیا اس سال بھی 30بچیوں نے F.Aکا امتحان دیا سمیرا اسلم فرسٹ آنے والی بچی نے 831نمبر لیے 28بچیاں امتحان میں کامیاب ہوئیں 2ناکام رہیں میانوالی کے کسی کالج نے آرٹس میں اتنے اچھے رزلٹ حاصل نہیں کیے ۔اس وقت 4 کلاسیں ، فرسٹ ائیر 34طالبات، سیکنڈ ایئر 27طالبات ، B.Aفرسٹ ایئر 21طالبات ، B.Aفائنل ایئر 24طالبات پرائیویٹ کالج میں زیر تعلیم ہیں ۔ 6ماسٹر ڈگری ہولڈرز انہیں پڑھا رہی ہیں ۔نا مسائد حالات میں بھی لیڈی پروفیسرز کی کارکردگی قابل تحسین ہے ، معائنہ فرما کر دیکھا جا سکتا ہے ۔اس وقت IKTکے ماتحت چلنے والا انڈس گرلز ہائی سکول 744بچیوں 28لیڈی ٹیچرز اور نویں اور دسویں کے 35,35طالبات کے تین سیکشنز کے ساتھ رواں دواں ہے۔ سکول کے گذشتہ سال کے رزلٹس کچھ یوں ہیں کہ 1050میں بچیوں نے 960اور 955نمبر حاصل کیے ہیں ۔میٹر پاس کرنیوالی جماعت دہم کی 25بچیاں سائنس FSCمیں داخلہ لینے کی قابلیت رکھتی تھیں چند امیر والدین کی بچیاں تو میانوالی اور اسلام آباد میں FSCمیں داخلہ لے لیا ہے جبکہ بہت سی FSCکی اہل ہونے کے باوجود داخلہ حاصل نہ کر سکیں اسلئے براہِ کرم جتنا جلد ممکن ہو سکے زیر تعمیر کالج کو جلد از جلد مکمل کیا جائے۔ کیونکہ آپ کے اپنے گرلز ہائی سکول سے میٹرک کرنے والی بچیاں بھی داخلہ حاصل نہیں کر پاتیں اور کرایہ کی عمارت F.Aاور B.Aکی کلاسز کی مزید متحمل نہیں۔

السیدہ خدیجہ وویمن ڈگری کالج کی تعمیر:

    رب ذوالجلال کے لطف و کرم کی بدولت کالج کی تعمیر کا آغاز 10مارچ 2010ءکو امام خمینی ٹرسٹ

کے مہیا کردہ بر لب سڑک 23کنال کے ایک وسیع پلاٹ پر کر دیا گیا۔اب کالج کے شایان شان جدید قسم کی عمارت جدید ترین ڈیزائن کے ساتھ پایہ تکمیل ہو چکی ہے۔ عمارت انتہائی خوبصورت ڈیزائن میں ہے ۔ اور نئی عمارت میں ایم ۔ اے تک کلاسز کا باقاعدہ اجراءہو چکا ہے۔

    اس کے علاوہ سائنس کلاسز کیلئے سائنس لیبارٹریز (بیالوجی لیب، کیمسٹری لیب، فزکس لیب اور کیمسٹری لیب) کی تعمیر مکمل ہو چکی ہے جبکہ ایڈمن بلاک کی تعمیر کا کام جاری ہے جو کہ انشاءاللہ جلد پایہ تکمیل تک پہنچ جائے گا۔

Leave a comment

Make sure you enter all the required information, indicated by an asterisk (*). HTML code is not allowed.